Afwaj e Pakistan افواج پاکستان

Afwaj e Pakistan by Muhammad Aslam Lodhi Pdf Free Download





عرض مصنف

پاک فوج قابل فخر ادارہ ہے تجربے، مہارت جانفشانی اور اپنے مقصد سے لگن کے اعتبار سے دنیا بھر میں ا س کا کوئی ثانی نہیں۔ یہ وہی فوج ہے جس نے دنیا کی دوسری بڑی سپر پاور سویت یونین کو اپنی اعلیٰ حکمت عملی سے شکست فاش دینے میں بنیادی کر دار ادا کیا۔ سفید روشی ریچھ اپنے ہی ناخنوں سے زخمی ہو کر افغانستان سے بھاگ نکلا۔ اور پھر اس کے جسم کے ٹکڑے ہو گئے۔ جن سے وسطی ایشیائ کی اسلامی ریاستیں وجود میں آئیں۔ جن پر روسی سامراج نے صدیوں پہلے سے جبری قبضہ کر رکھا تھا۔
آج کے دور میں امریکہ بے شک دنیا کی واحد سپر طاقت ہے اور اسلحے کی جدیدیت کے اعتبار سے اس کا کوئی ثانی ہیں لیکن جب میدان جنگ میں جذبہ ایمانی اور جنگی حکمت و دانش کی بات آتی ہے تو ہر کسی کی نگاہیں پاک فوج کے غیور، نڈر اور دلیر جوانوں کی طرف اٹھتی ہیں۔ لڑائی کا میدان ہو ۔ گولیوں کی بوچھاڑ ہو، ٹینکوں اور توپوں کی گھن گرج ہو، پاک فوج کا جوان نعرہ تکبیر ، نعرہ رسالت اور نعرہ حیدری کے نعرے لگاتا ہوا دشمن پر ٹوٹ پڑتا ہے۔ برستے گولوں اور چنگھاڑتے مزائلوں میں اسے اپنی فکر نہیں ہوتی۔ بلکہ حکم خداوندی کے ساتھ ساتھ وطن عزیز کی حفاظت اور سنیئر کے حکم کی تعمیل ہی اس کی زندگی کا سب سے بڑا مقصد ہوتا ہے۔ بلا شبہ پاک فوج کے یہی وہ جوان ہیں جو سر بکف برفانی چوٹیوں کے برفانی مورچوں پر ہتھیار سنبھالے جارحانہ انداز میں دشمن کے بڑھتے ہوئے قدم روکے ہوئے ہیں۔ پاک فوج کے یہی وہ عظیم مجاہد ہیں جو برفانی پانی میں کھڑے ہو کر نہروں اور دریاؤں پر جنگی مقاصد کے لیے پل بناتے ہیں۔ یہی وہ جری جوان ہیں جو خاردار بلند وبالا درختوں پر چڑھ کر تاروں کو سینکڑوں میل دور تک بچھاتے ہیں۔ یہی وہ عظیم لوگو ہیں جو بھوکے پیاسے اپنے اہل خانہ کے غم و خوشی سے بے نیاز وطن کی سرحدوں پر اپنے لہو سے حریت اور بہادری کی داستان رقم کر تے ہیں۔ دوران سیلاب اپنے ہم وطن بوڑھوں ، بچوں اور حاجت مند لوگوں کو اپنے کندھوں پر بٹھا کر محفوظ مقامات تک پہنچاتے ہیں جو زلزلے کی جان لیوا آفات میں بھی اپنی جان کی پرواہ نہ کرتے ہوئے ہم وطنوں کی دل و جان سے مدد کرتے ہیں۔
قومی تعمیر و ترقی کے کاموں میں بھی پاک فوج کے جوانوں کی داستان کم طویل نہیں ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ پاک فوج اور اس کے غیور، نڈر اور بہادر افسروں اور جوانوں پر جتنا بھی فخر کیا جائے، کم ہے۔
عالمی سطح پر افواج پاکستان کے کردار کو بھی فراموش نہیں کیا جاسکتا۔ اقوام متحدہ کی جانب سے دنیا کے بیشتر ممالک میں بھی امن و امان کی بحالی  اور تعمیر و ترقی کے لیے تعینات کیا گیا ۔پاک فوج کےجوانوں نے بہترین تربیت، جذبہ ایمانی کو بروئے کار لاتے ہوئے ناموافق حالات، زمینی پس پردہ حقائق سے نا آشنائی کے باوجود ایسا غیر جانبدرانہ اور شاندار کردار ادا کیا کہ نہ صرف امن و امان کے حوالے سے مطلوبہ مقاصد حاصل ہوئے بلکہ مقامی لوگوں میں بھی پاک فوج کے بارےمیں احترام کے جذبات پیدا ہوئے اگر یہ کہا جائے تو غلط نہ ہوگا کہ عالمی سطح پر پاک فوج کی پیشہ وارانہ تربیت، اعلیٰ قائدانہ صلاحیتوں کا اعتراف کیا گیا ہے جو پاک فوج کے افسروں  اور جوانوں کے لیے کسی اعزاز سے کم نہیں ہے۔
گزشتہ ستاون سال سے پاک فوج جن کٹھن حالات ے گزر کر اکیسویں صدی میں داخل ہوئی ہے قوم کے سامنے انہیں کارناموں اور مشکلات کو اجاگر کرنے کی میں نے کوشش کی ہے تاکہ وطن سے محبت کرنے والے اپنی فوج اور اس کے افسروں اور جوانوں کے بارے میں حالات سے آگاہی حاصل کر سکیں اور ان کے د ل میں اپنے محسنوں کے بارے میں احترام کے جذبات پیدا ہوں۔



اس کتاب کو ڈاؤنلوڈ کریں

Download


or 


Read Online Here