Ulma aur Siasat, pdf Urdu Book

Ulma aur Siasat, a pdf urdu book on history written by Dr. Mubarak Ali. Download Free pdf Urdu book Ulma aur Siasat.




کچھ اس کتاب کے بارے میں

آج کے سیاسی حالات میں اس کتاب کی اہمیت اس لیے ہے کہ یہ علمائ کے سیاسی کردار کا تاریخی جائزہ، ان کی موجودہ سیاسی سرگرمیوں اور ان کے مقاصد کو سمجھنے میں مدد دے گی کیونکہ اس وقت علماء جس طرح سیاست میں داخل ہوئے ہیں، ان کا یہ رول پاکستان کے ابتدائی دنوں میں نہیں تھا۔
1970 کی دھائی میں جب سے انہیں عرب ملکوں سے امداد ملنی شروع ہوئی ان کا سیاسی کردار ان کے مذہبی کردار سے زیادہ اہم ہو گیا ہے۔ بلکہ ان میں سے کچھ تو ایسی جماعتیں ہیں جو محض سیاسی بن کر رہ گئی ہیں ، جس کی وجہ سے علماء کا کردار جو اب تک تھا بہت حد تک بدل چکا ہے، دین کی تبلیغ یا مذہب کے دفاع کے بجائے اب ان کا مقصد اقتتدار پر قبضہ کرنا ، اقتتدار میں شرکت کرنا ہے، اس طرح سے دین کی اہمیت گھٹ کر ثانوی رہ گئی ہے۔
لہذا سیاسی اقتدار کی جنگ میں، تشدد کا جو عنصر دوسری سیاسی جماعتوں میں ہے وہ علماء کی جماعتوں میں بھی داخل ہو گیا ہے، ان کے اردگرد کلاشنکوف، حفاظتی دستوں کے نظر آنے، اور شان و شوکت والے طرز رہائش کو اختیار کرنے سے ان کی تشخیص عالموں والی نہیں رہی ہے۔ بلکہ یہ بھی جاگیرداروں کی صف میں شامل ہو گئے ہیں۔
لیکن پاکستان اور دوسرے مسلم ملکوں میں جو فرق ہے وہ یہ کہ اس شان و شوکت کی علامتوں کو اختیار کرنے کے باوجود، یہ انتخابات میں کامیاب نہیں ہو سکتے ہیں، کیونکہ لوگ اب بھی سیاست اور مذہب کو علیحدہ سمجھتے ہیں، اور علماء کے کردار کو صرف مسئلہ مسائل سمجھنے کی حد تک  محدود رکھنا چاہتے ہیں۔
پاکستان میں علماء کی جماعتیں اس لیے مقبولیت حاصل نہیں کر سکیں کیونکہ ایوب خان کے بعد سے ان کا تعلق کسی نہ کسی طرح سے اقتدار کے ساتھ رہا ہے۔ اور جہاں آمریت ناکام ہوئی، وہاں علماء بھی آمروں کے ساتھ تعاون کرنے پر غیر مقبول ہوئے۔
ہمارے سیاستدانوں کی بدعنوانیوں اور نا اہلی کے باوجود علماء کی جماعتیں نعم البدل کے طور پر اس لئے ابھر کر نہیں آ سکیں کہ ان کے تاریخی کردار کی جو یادیں لوگوں کے ذہن میں ہیں، وہ انہیں اس بات سے روکتی ہیں کہ اقتدار ان کے حوالے کیا جائے۔ اس لیے علماء پس منظر میں رہتے ہوئے تو اپنے اثر کو استعمال کر رہے ہیں، اور سیاسی جماعتیں ان کے اثر سے ڈر کر ان کے منشور کو اختیار کر رہی ہیں۔ مگر جہاں تک عوام کا تعلق ہے، ان کا ذہن ابھی تک سیکو لر ہے، اس سیکولر ذہن کو برقرار رکھنے لیے ضروری ہے کہ لوگوں کے ذہنوں میں جو شک و شبہات ہیں انہیں دور کیا جائے ۔ یہ کتاب اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔


اس کتاب کو ڈاؤنلوڈ کریں

Download


or 


Read Online Here